Prime Minister Imran Khan has said that the recent rains have highlighted the problems of the administrative structure

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ حالیہ بارشوں نےانتظامی ڈھانچے کے مسائل کو اجاگر کیا ہے، کراچی کےحالات کا تقاضا ہے اختیارات بااختیار ایڈمنسٹریٹر کو تفویض کیے جائیں۔
تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت کراچی ٹرانسفارمیشن پلان کے حوالے سے اعلیٰ سطح اجلاس ہوا، جس میں گورنر سندھ عمران اسماعیل،چیئرمین این ڈی ایم اے ،وفاقی وزرا نے شرکت کی۔
اجلاس میں کراچی کے دیرینہ مسائل کے حل اور “کراچی ٹرانسفارمیشن پلان” کاجائزہ لیا گیا، وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ کراچی کے عوام کو بے شمار مسائل درپیش ہیں، بدقسمتی سےماضی میں مسائل کے مستقل حل کو نظر انداز کیا جاتا رہا۔
حالیہ بارشوں نےانتظامی ڈھانچے کے مسائل کو اجاگر کیا ہے ، انتظامی ڈھانچے نے کراچی کےعوام کو بےتحاشامسائل سے دوچار کیاہے، کراچی کےعوام کے مسائل کا وفاقی حکومت کو مکمل ادراک ہے۔
بااختیار اور موثر نظام کراچی ٹرانسفارمیشن پلان کیلئے ضروری ہے، کراچی کے مسائل کی سب سے بڑی وجہ انتظامی اختیارات کا منقسم ہونا رہا ہے، اس امر کی بارہا وفاقی اور صوبائی حکومت کی جانب سے نشاندہی کی جاتی رہی۔
کراچی کےحالات کا تقاضا ہے اختیارات بااختیار ایڈمنسٹریٹر کو تفویض کیے جائیں، سیوریج ،سالڈویسٹ ،بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی اختیارات ایڈمنسٹریٹرکے پاس ہونے چاہئیں۔
خیال رہےو زیراعظم عمران خان جمعے کے بجائے ہفتے کو کراچی کادورہ کریں گے، دورہ کےدوران عمران خان مسائل کے مستقل حل کااعلان کریں گے۔
یاد رہے وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت کراچی کے مسائل کے مستقل حل کیلئے اعلیٰ سطح اجلاس ہوا تھا ، جس میں وزیرِ اعظم نے ہدایت کی تھی کہ تمام اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت سے رواں ہفتے “کراچی ٹرانسفارمیشن پلان” کو حتمی شکل دی جائے تاکہ اس کی باقاعدہ منظوری اور عمل درآمد کا کام شروع کیا جا سکے۔
وزیرِ اعظم نے کراچی کے مسائل کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ ملک کی ترقی کراچی کی ترقی سے وابستہ ہے، کراچی میں سالہا سال سے درپیش عوامی مسائل کا مکمل ادراک ہے، عوام کی مشکلات پر آنکھیں بند نہیں کر سکتے۔
عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ کراچی کے مسائل کے حل اور ترقی کیلئے وفاق بھرپور کردار ادا کرے گا۔

حکومت نے ایف اے ٹی ایف اور زیرالتوا بل پاس کرانے کی ٹھان لی، اس حوالے سے قومی اسمبلی کااجلاس 7ستمبر کو طلب کرلیا گیا ہے۔
تفصیلات کے مطابق حکومت نے ایف اے ٹی ایف اور زیرالتوابل ہر صورت پاس کرانے کا فیصلہ کرلیا، ذرائع کا کہنا ہے کہ قومی اسمبلی کااجلاس 7ستمبرکی شام 4بجےطلب کرلیا ہے جبکہ پارلیمنٹ کامشترکہ اجلاس آئندہ ہفتےبلائے جانے کا امکان ہے۔
ذرائع کے مطابق حکومتی واتحادی اراکین کی حاضری یقینی بنانے کیلئے رابطے جاری ہے ، اس سلسلے میں قومی اسمبلی کےچیف وہپ عامرڈوگر نے حکومتی واتحادی اراکین سے رابطے کرکے اجلاس میں شرکت یقینی بنانے کی ہدایت کردی ہے۔
دوسری جانب وزیراعظم سےحکومتی واتحادی سینیٹرزکی ملاقات آج ہو گی، جس میں وزیراعظم سینیٹرزکوایف اےٹی ایف سمیت اہم قانون سازی پرہدایت دیں گے

Altaf
This website is managed by Image Proud. Image Proud Inc is a 1 years old Entertainment Company that has been made for helping the people to laugh all over the worldwide. Our motive to educate people about laughter and another issue.